Cars

Economic Coordination Committee ( ECC) Approves Electric Vehicle Policy for Certain Type of Vehicles

کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی نے دو اور تین پہیئوں اور بھاری تجارتی گاڑیوں کے لئے الیکٹرک وہیکل پالیسی کی منظوری دے دی ہے۔ وزیر اعظم کے مشیر برائے خزانہ اور محصولات ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کی زیر صدارت کابینہ کی اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کا اجلاس ہوا، اس پالیسی کی تجویز وزارت صنعت نے انجینئرنگ ڈویلپمنٹ بورڈ ، وزارت سائنس و ٹکنالوجی ، وزارت موسمیاتی تبدیلی ، وزارت سائنس و ٹکنالوجی ، اور دیگر مختلف اسٹیک ہولڈرز سے مشاورت کے بعد دی۔

اجلاس میں مزید بتایا گیا کہ اس پالیسی کی وجہ سے مشینوں ، پرزوں اور  گاڑیوں کی فروخت پر محصولات اور ٹیکس میں کمی واقع ہوگی، اور   4 پہیوں والی الیکٹرک گاڑیوں کے لئے پالیسی پر غور کیا جارہا ہے اور جلد ہی اس کو حتمی شکل دی جائے گی۔

پاکستان میں،  مستقبل میں الیکٹرک وہیکل پالیسی کی وجہ سے نا صرف شہروں میں فضائی آلودگی کے خطرناک مسئلے میں مدد مل سکتی ہے بلکہ پاکستان کی معیشت میں بہتری کی بھی صلاحیت رکھتی ہے۔

مزید برآں ، حکومت چارجنگ اسٹیشنوں میں نجی سرمایہ کاری کی حوصلہ افزائی کے لیئے چارجنگ اسٹیشن آپریٹرز کے لئے بجلی کے یونٹ کی شرح کو کم کرے گی۔ حکومت تمام بڑے شہروں میں ہر 10 مربع کلومیٹر میں (کم از کم 3،000 سے زیادہ ناکارہ سی این جی اسٹیشنوں کے مقامات کی نشاندہی کی جا چکی ہے، چارجنگ اسٹیشنوں کے لیئے ) اور ہر موٹر ویز پر ہر 15–30 کلو میٹر پر کم از کم ایک ڈی سی فاسٹ چارجنگ اسٹیشن بھی لگائے گی۔

پانچ لوکل الیکٹرک وہیکل مینوفیکچروں نے حال ہی میں پاکستان الیکٹرک وہیکلز مینوفیکچرنگ ایسوسی ایشن (پی ای وی ایم اے) کے طور پر ایک اتحاد قائم کیا ہے اور اس شعبے میں نمایاں سرمایہ کاری کی ہے ، اورلوکل الیکٹرک وہیکل مینوفیکچروں میں سے کچھ  بین الاقوامی آٹوموبائل کمپنیوں کے ساتھ شراکت میں بھی ہیں۔

Tax Incentives

  1. 1% GST for EVs (down from 17%)
  2. 1% Import Duty on charging equipment
  3. Lower electricity tariffs for EV charging stations
  4. All greenfield investments apply to Electric Vehicles manufacturers and those converting their existing facilities to manufacture EVs

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also
Close
Back to top button