پاکستان

لاک ڈاﺅن کب اور کس طرح کھلیں گا وزیراعظم عمران خان نے بتا دیا ۔بالآخر یہ بھی بتا دیا ٹائیگر فورس اپنا کام کب سے شروع کرے گے

وزیر اعظم عمران خان نے پیر کو کہا کہ لاک ڈاؤن کو پورے ملک میں آہستہ آہستہ ختم کیا جائے گا۔ پاکستان میں کورونا وائرس کے کیسز کی تعداد 20000 سے تجاوز کرگئے۔

وزیر اعظم نے متنبہ کیا کہ “ہم (لاک ڈائون میں نرمی کررہے ہیں) کیونکہ لوگ پریشان ہو رہے ہیں اور اپنی ملازمتوں سے محروم ہو رہے ہیں۔ لیکن اگر ایس او پیز پر عمل نہیں کیا گیا تو ہمیں خدشہ ہے کہ لاک ڈائون تیزی سے پھیل سکتا ہے جس کی وجہ سے  ہم ایک بار پھر لاک ڈاؤن کی طرف بڑھنے پر مجبور ہوجائیں گے۔کورونا ٹائیگر فورس کے بارے میں بات کرتے ہوئے وزیر اعظم نے کہا کہ حکومت اس وائرس سے نمٹنے کے لئے ضروری احتیاطی تدابیر کے بارے میں شعور بیدار کرے گی۔انہوں نے کہا ، “ٹائیگر فورس کو تنخواہ نہیں دی جائے گی ، وہ (کورونا وائرس کے خلاف)جہاد کریں گے ،” انہوں نے مزید کہا کہ یہ ٹیم یونین کونسل کے دفاتر میں ہیلپ ڈیسک قائم کرے گی اور ضرورت مندوں کی رجسٹریشن میں مدد کرے گی۔وزیراعظم نے مزید کہا کہ لاک ڈائون کی وجہ سے مقامی دکانداروں اور وائٹ کالر کارکنوں پر بھی اثر پڑا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹائیگر فورس عام لوگوں میں شعور اجاگر کرے گی لیکن فیکٹری منیجرز اور تاجروں کی ذمہ داری ہے کہ وہ اس بات کا یقین کریں کہ ایس او پیز پر عمل درآمد کو یقینی بنایا جائے۔وزیر اعظم عمران خان نے پوری دنیا میں وائرس کے اثرات کی وضاحت کرتے ہوئے کہا ہمارا ملک پہلے ہی غریب تھا ، لیکن اس نے (کورونا وائرس) برطانیہ جیسے امیر ممالک کو بھی سخت نقصان پہنچایا ہے۔

انہوں نے کہا ، “برطانیہ میں یہاں تک کہ ان کے وزیر اعظم کی درخواست کے بعد 250000 سے زیادہ افراد نے رضاکارانہ طور پر اپنا اندراج کرایا۔انہوں نے مزید کہا ، “صرف انتظامیہ ہی (کورونا وائرس بحران) کو نہیں سنبھال سکتی ہے ، لہذا ہمیں ایک رضاکار فورس کی ضرورت ہے۔”

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button