پاکستان

نیب نے زرداری کے خلاف ایک اور انکوائری کی تیاری کرلی،اپنے اسٹینو گرافر کے اکاﺅنٹ سے 15کروڑ وصول کیے

قومی احتساب بیورو (نیب) نے پیر کو جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کے سلسلے میں پاکستان پیپلز پارٹی (پی پی پی) کے شریک چیئرمین اور سابق صدر آصف علی زرداری کے خلاف ایک اور تحقیقات کی تیاری کرلی ہے۔

نیب کے نمائندے نے دعوی کیا کہ سابق صدر آصف زرداری نے کراچی کے کلفٹن میں بدعنوانی سے اپنا مکان تعمیر کیا ہے کیونکہ اس رہائش کے لئے 15 کروڑ روپے پیپلز پارٹی کے رہنما کے اسٹینوگرافر مشتاق کے بینک اکاؤنٹ سے ادا کیے گئے تھے۔

نیب نے بتایا ،آصف زرداری اپنے کلفٹن مکان کے لئے خود سے رقم ادا کرنے کا ثبوت فراہم کرنے میں ناکام رہے ہیں۔

بیورو کے عہدیدار نے بتایا کہ 104 غیر ملکی دوروں پر اسٹینوگرافر مشتاق سابق صدر کے ہمراہ تھے۔ نیب نے بتایا کہ آصف زرداری نے اپنے کلفٹن کی رہائش گاہ سے متعلق سوالنامے کے تسلی بخش جوابات نہیں دیئے ہیں۔

اینٹی کرپشن بیورو کے نمائندے نے مزید بتایا کہ مشتاق اس وقت فرار ہوگیا جب ان سے تفتیش کے لئے رابطہ کیا گیا۔

مزید یہ کہ نیب نے عدالت سے استدعا کی ہے کہ وہ آصف زرداری کے کلفٹن کے گھر کو تحقیقات مکمل ہونے تک منجمد کردیں۔

اس سے قبل احتساب عدالت نے جعلی بینک اکاؤنٹس کیس کے ذریعے منی لانڈرنگ میں آصف علی زرداری اور ان کی بہن فریال تالپور پر فرد جرم عائد کردی تھی۔

دسمبر 2019 میں ، سابق صدر آصف علی زرداری کو طبی بنیادوں پر رہا کیا گیا تھا

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button