پاکستان

مویشی منڈی صبح 6 بجے سے شام 7 بجے تک کام کریں گی این سی او سی کے اجلاس میں مویشی منڈیوں کے حوالے سے اہم فیصلے

صوبائی دارالحکومت پنجاب میں منعقدہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) کے اجلاس میں فیصلہ کیا گیا ہے کہ مویشی منڈی شہر کی حدود سے باہر قائم کی جائے گی اور شام 6 سے شام 7 بجے کے درمیان چلے گی۔

این سی او سی نے معاشی آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پیز) پر بھی سختی سے عملدرآمد کو یقینی بنانے کا فیصلہ کیا ہے جس میں معاشرتی دوری ، چہرے کے ماسک پہننے اور صارفین کی اسکریننگ شامل ہیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سنٹر (این سی او سی) کا خصوصی اجلاس آج لاہور میں ہوا۔ وزیر منصوبہ بندی و ترقیات اسد عمر اور نیشنل کوآرڈینیٹر لیفٹیننٹ جنرل حمود از زمان خان نے اجلاس کی صدارت کی جبکہ اسلام آباد ، آزاد کشمیر اور دیگر صوبوں کے نمائندوں نے ویڈیو لنک کے ذریعے اجلاس میں شرکت کی۔

اجلاس کے دوران بھیڑ بھاڑ کو کم کرنے کے لئے مویشی منڈیوں کی تعداد میں اضافہ کرنے کا بھی فیصلہ کیا گیا جبکہ عید الفطر کی نماز کے لئے جس منصوبے پر عمل کیا گیا وہ بھی عیدالاضحی پر عمل کیا جائے گا۔

دریں اثنا ، چیف کارپوریشن آفیسر سید علی عباس بخاری نے کہا کہ یہ بازار شہری آبادی سے دو سے 45 کلومیٹر دور واقع ہوں گے اور عید سے 10 دن پہلے ہی آپریشنل ہوجائیں گے اور ہر مارکیٹ میں لائیو اسٹاک اینڈ ہیلتھ ڈیپارٹمنٹ کیمپ لگے گا۔ لازمی ماسک کے ساتھ مارکیٹ میں ایک فیملی سے صرف 2 افراد کی اجازت ہوگی۔

یہاں یہ امر قابل ذکر ہے کہ کسی بھی صوبے میں این سی او سی کا یہ پہلا اجلاس تھا اور اس طرح کے اجلاس دوسرے صوبوں کے صوبائی دارالحکومتوں میں بھی ہوں گے۔

صوبائی دارالحکومتوں میں ہونے والے اجلاسوں کا مقصد کورونا وائرس کے خلاف قومی اتحاد قائم کرنا ، بہتر تفہیم ، تعاون اور صوبوں کے مابین ہم آہنگی پیدا کرنا ہے۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button