Cars

میک آٹو شو

میک آٹو شو، ایک ایسا فورم ہے جہاں اردو زبان میں آپ کو دنیا بھر کی آٹو انڈسٹریزخاص طورپرجاپان کی گاڑیوں کے بارے میں بہترین معلومات ملیں گی۔

آج ہم جاپان کی آٹو انڈسٹری پر کورونا بحران کے اثرات کے موضوع پر بات کریں گے۔

کورونا وائرس نے پوری دنیا کو غیریقینی صورتحال سے دوچارکردیا ہے۔ طاقتور ملکوں سے لے کر ترقی پذیر اور غریب ممالک تک سب بری طرح کورونا بحران سے متاثرہیں۔ کورونا وائرس نے انسانی زندگی کو بہت جہتوں سے بدل کے رکھ دیا ہے۔ دنیا ایک اّن دیکھے دشمن کے ساتھ حالت جنگ میں ہے۔ جدید دنیا کے ممالک کی بنیادیں مظبوط معیشت پراستوار ہوتی ہیں،

مگر اِس وائرس نے مضبوط معیشتوں کو گھٹنے کے بَل جھکنے پر مجبور کردیا ہے۔ ترقی پذیراورکمزورممالک اپنی معیشتوں کو زندہ رکھنے کے لیًے عالمی اداروں سے مدد کی اپیل کر رہے ہیں۔

دنیا بھر کی طرح جاپان میں بھی کورونا وائرس نے زندگی کی تصویر کو بہت دھندلا کردیا ہے۔ جاپان کے وزیراعظم    ” ایم آر شینزوابے” کوبھی کہنا پڑا کہ “دوسری عالمی جنگ کے بعد سب سے بڑا بحران” نتیجتاَ جاپان میں معاشی سرگرمیاں بہت متاثرہوئی ہیں۔ جاپان کی اہم ترین صنعتوں میں آٹو انڈسٹری بہت اہم ہے۔

جاپان کی آٹوموٹو انڈسٹری کا دنیا کی نمایاں اور بڑی صنعتوں میں بہت بڑا مقام ہے۔ جاپان 1960 کی دہائی سے سب سے زیادہ کاروں کی تیاری کے ساتھ سرفہرست تین ممالک میں رہا ہے، جوجرمنی کو بھی پیچھے چھوڑ گیا ہے۔

کورونا وائرس بحران کی وجہ سے جاپان کی آٹوموٹوانڈسٹری کو بھی بہت رکاوٹوں کا سامنا ہے۔ لاک ڈاوًن کی وجہ سے جہاں لوگ گھروں تک محدود ہوگئےہیں، وہاں سڑکیں، ہوائی گذرگاہیں، آبی گذرگاہیں اور ہر طرح کی ٹرانسپورٹ بھی بہت حد تک بند ہو گئیں۔ کاروں کی طلب میں کمی کی وجہ سے بڑی بڑی کمپنیوں کو اپنی پیداوار بہت کم کرنا پڑی۔ حال ہی میں ٹویوٹا موٹرکارپوریشن نے اپنی سات پروڈکشن لائنوں کو جاپان میں اپنے پانچ کار پلانٹس میں معطل کر دیا ہے، کیونکہ کورونا وائرس کے عالمی وبائی مرض نے دنیا بھر میں کاروں کی مانگ میں بڑی تیزی سے کمی کر دی ہے۔ بڑے پیداواری یونٹس کے علاوہ ، درمیانے اور چھوٹے درجے کے کاروں کے پرزہ جات بنانے والے ادارے بھی کورونا وائرس بحران کی وجہ سے بُری طرح متاثر ہوےً ہیں۔

کاروں کی فروخت کے حوالے سے دنیا کی دوسری سب سے بڑی کمپنی ٹویوٹا

کارپوریشن کے مطابق، کاروں کی پروڈکشن کی معطلی کے نتیجے میں گاڑیوں کی پیداوار میں تقریباََ 36000 یونٹ کی کمی واقع ہو گی۔ کورونا وائرس کے پھیلاوً نے جاپان کے کار ساز اداروں اور کاروں کے مختلف پارٹس بنانے والے اداروں کی پریشانیوں کو بھی طول دیا ہے۔ مثال کے طور پر ہنڈا موٹرکارپوریشن، نسان موٹرکارپوریشن، سوبارو کارپوریشن اورکچھ اور آٹو موٹو اداروں نے کاروں کی طلب میں انتہائی کمی کی وجہ سےیا تو کاروں کی تیاری بند کی ہوئی ہے یا بہت کم تعداد میں گاڑیاں بنائی جا رہی ہیں۔ جاپان میں حالیہ مہینوں میں شورومز آ کے نئ گاڑیاں خریدنے والوں میں بھی بہت کمی واقع ہوئی ہے۔

عالمی سطح پر بھی لاک ڈاوًن کی وجہ سے آٹو سپلائی لائن بری طرح متاثر ہوئی ہے۔ آٹوموٹو انڈسٹری کے ساتھ ساتھ پوری دنیا میں گہری کساد بازاری چھائی ہوئی ہے کورونا وائرس کے بحران کی وجہ سے۔

دنیا کے مختلف ممالک میں لاک ڈاوًن میں نرمی کے باوجود معیشتوں کو سنبھلنے میں وقت لگے گا، کتنا وقت؟ اس سوال کا جواب کسی کے پاس بھی نہیں ہے۔۔۔۔۔۔۔

 

 

 

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Check Also
Close
Back to top button