پاکستان

عمر ایوب نے 12 گھنٹوں تک لوڈشیڈنگ کرنے کا اعتراف کر لیا

وفاقی وزیر برائے توانائی عمر ایوب خان نے اعتراف کیا کہ بارہ گھنٹے تک کی لوڈشیڈنگ مختلف شہروں میں ہورہی ہے۔

پاور ڈویژن نے لوڈ شیڈنگ کے لئے ’لوڈ مینجمنٹ‘ کی ایک نئی اصطلاح تیار کی ہے اور اپنی سرکاری دستاویز میں کہا ہے کہ ملک میں لوڈ مینجمنٹ چل رہا ہے۔

تفصیلات کے مطابق ، 474 فیڈروں پر آٹھ سے بارہ گھنٹے ، 623 فیڈروں پر چھ گھنٹے اور 390 فیڈروں پر چار گھنٹے کا لوڈ مینجمنٹ جاری ہے۔

دستاویز کے مطابق ، پچھلے سال چوری اور نظام کی خرابی کی وجہ سے 16 ارب یونٹ سے زیادہ بجلی ضائع ہوگئی۔

مزید بتایا گیا ہے کہ موسم سرما میں 16 ارب یونٹ پورے ملک کی دو ماہ تک بجلی کی ضرورت کو پورا کرتے ہیں۔ 2018-19 میں پیدا ہونے والی بجلی کا 14.72 فیصد ضائع ہوا۔

پشاور الیکٹرک سپلائی کمپنی (پیسکو) نے پانچ ارب ارب یونٹ ضائع کیے اس کے بعد ملتان الیکٹرک پاور کمپنی (ایم ای پی سی او) نے 2.70 بلین یونٹ کے ساتھ ، لاہور الیکٹرک پاور کمپنی (لیسکو) نے 1.60 بلین یونٹ ، حیدرآباد الیکٹرک سپلائی کمپنی (حیسکو) نے 1.42 یونٹ ضائع کیے۔1.21 ارب یونٹ فیصل آباد الیکٹرک سپلائی کمپنی فیسکو نے ضائع کیے

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button