پاکستان

تعلیمی اداروں میں کورونا کیسز آنے کے بعد تعلیمی ادار ے بندہوگے یا نہیں حکومت کی واضح ہدایات سامنے آگئی

ہفتے کے روز وفاقی وزیر تعلیم و پیشہ ورانہ تربیت شفقت محمود نے کہا کہ طلبا کی صحت حکومت کی اولین ترجیح ہے۔

شفقت محمود نے آج ایک ٹویٹ میں یقین دہانی کرائی ، “ہم جو بھی فیصلہ کریں گے وہ وزارت صحت کے مشورے سے کرے گے اور [تعلیمی اداروں] کھولنے کے فیصلے کو بڑی احتیاط کے ساتھ لیا گیا ہے۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ چھ ماہ سے اسکولوں ، کالجوں اور یونیورسٹیوں کی بندش نے طلباء کو شدید متاثر کیا ہے اور اداروں کو بند کرنے کا جلد بازی سے فیصلہ تعلیم کو ’تباہ‘ کرے گا۔

دوسری جانب ، سندھ نے تعلیمی اداروں کو دوبارہ کھولنے کا دوسرا مرحلہ ملتوی کردیا ہے۔

وزیر تعلیم سندھ سعید غنی نے ایک نیوز کانفرنس میں کہا کہ سرکاری اسکولوں میں کورونا وائرس اسٹینڈرڈ آپریٹنگ طریقہ کار (ایس او پیز) کی 100 فیصد پیروی نہیں کی گئی لیکن صورتحال نسبتا بہتر ہے۔

پانچویں سے آٹھویں جماعتیں 21 ستمبر کو دوبارہ شروع نہیں ہوں گی اور ایک ہفتے کے بعد صورتحال کا تجزیہ کیا جائے گا۔ حالت بہتر ہونے پر مڈل کلاسز 28 ستمبر کو شروع کی جاسکتی ہیں لیکن صورتحال خراب ہونے پر ملتوی کردی جائے گی۔

حکومت طلبا کی صحت پر کوئی سمجھوتہ نہیں کرے گی۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button