پاکستان

نیب نے وزیراعلیٰ بزدار کے دور میں الاٹ کئے گئے ٹھیکوں کی انکوائری کا آغاز کیا

قومی احتساب بیورو (نیب) نے موجودہ وزیر اعلیٰ پنجاب (وزیراعلیٰ) سردار عثمان بزدار کے دور میں مختص معاہدوں کی تحقیقات کا آغاز جمعہ کو کیا ہے۔

ذرائع کے مطابق اینٹی گرافٹ واچ ڈاگ نے اس سلسلے میں لاہور ڈویلپمنٹ اتھارٹی (ایل ڈی اے) ، ٹریفک انجینئرنگ اینڈ ٹرانسپورٹ پلاننگ ایجنسی (ٹی ای پی اے) اور دیگر محکموں سے ریکارڈ طلب کیا ہے۔

بیورو نے متعلقہ حکام کو اہم ترقیاتی منصوبوں کے معاہدوں کی تفصیلات پیش کرنے کی ہدایت بھی کی ہے۔

عثمان بزدار نے انسداد بدعنوانی بیورو کو شراب لائسنس کے اجراء سے متعلق تمام دستاویزات حوالے کیں اور کہا ، “مجھے کچھ معلوم نہیں ہے کیونکہ میں تیار نہیں ہوں۔ مجھے ان سوالات کے بارے میں سوچنے اور ان کے جوابات دینے کا وقت دیں۔

دریں اثنا ، سابق ڈائریکٹر جنرل (ڈی جی) ایکسائز اکرم اشرف گوندل نے بھی اپنا بیان قلمبند کیا اور دعوی کیا کہ انہوں نے چیف منسٹر آفس کو آگاہ کیا ہے کہ شراب کا لائسنس جاری کرنا اس پالیسی اور قواعد کے خلاف ہوگا کیونکہ این او سی مکمل نہیں ہوئے تھے۔

تاہم انہوں نے اس وقت کے چیف منسٹر کے پرنسپل سکریٹری راحیل احمد صدیقی کی درخواست پر لائسنس کی منظوری دی۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button