ورلڈ

مارک زکر برگ کے اثاثوں میں دو ماہ کے دوران 30ارب ڈالر کا اضافہ

دنیا بھر میں کوروناوائرس وبائی امراض کی وجہ سے لاک ڈاؤن اور معاشی بندش کے باوجود ، فیس بک کے بانی مارک زکربرگ نے صرف دو مہینوں میں 30 بلین ڈالر (48 کھرب پاکستانی روپے سے زیادہ) کمائے ہیں۔

بلومبرگ انڈیکس کے مطابق ، مارک زکربرگ اس اضافے کے بعد دنیا کے تیسرے امیر ترین شخص بن گئے ہے اور اب وہ 8۔87 بلین ڈالر کے مالک ہیں اب صرف وہ ایمیزون کے سی ای او جیف بیزوس اور مائیکرو سافٹ کے مالک بل گیٹس سے پیچھے ہیں۔

مارچ 17 کو جب کیلیفورنیا کے سیلیکن ویلی میں لاک ڈاؤن ہوا تو مارک زکربرگ کے اثاثوں کی مالیت 57.5 بلین ڈالر تھی۔

کیلیفورنیا میں کورونا وائرس پر قابو پانے کے لئے لاک ڈاؤن اب بھی موجود ہے اور پوری دنیا میں لاکھوں افراد اپنی ملازمت سے ہاتھ دھو بیٹھے ہیں ، لیکن فیس بک کے بانی کی دولت میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے۔ مارک زکربرگ کے اثاثوں میں اضافے کی ممکنہ وجہ کمپنی کی معاشی نمو میں اضافہ ہے۔رواں سال کی پہلی سہ ماہی کے نتائج 29 اپریل کو جاری کیے گئے تھے اور وہ توقع سے بہتر تھے۔

فیس بک نے اس رپورٹ میں بہتر کارکردگی کا مظاہرہ کیا۔

اس سہ ماہی کے دوران ، فیس بک نے 17.74 بلین کی آمدنی حاصل کی اور اسے 1.74 بلین صارفین نے استعما کیا ، جبکہ اس کے تمام ایپس کے ماہانہ صارفین پہلی بار 3 ارب تک پہنچ گئے۔ ان نتائج کے بعد ، فیس بک کے حصص کی مالیت میں 8فیصد اضافہ ہوا۔

لیکن فیس بک نے کہا کہ اشتہارات کی مانگ میں نمایاں کمی 2020 کی پہلی سہ ماہی کے آخری تین ہفتوں میں دیکھی گئی تھی اور دوسری سہ ماہی میں بھی اس کا اثر پڑ سکتا ہے۔

پچھلے دو ماہ کے دوران ، فیس بک نے اپنی ایپس میں متعدد اضافے کیے ہیں ، جن میں ویڈیو چیٹنگ کی خصوصیت اور ای کامرس کے کچھ فیچرز شامل  ہیں۔ فیس بک نے حال ہی میں میسینجر میں ایک ویڈیو چیٹ کا فیچر متعارف کروایا ہے ، جس کی مدد سے 50 افراد بیک وقت چیٹ کرسکتے ہیں۔

اسی طرح فیس بک شاپس کے نام سے ایک ای کامرس فیچر رواں ہفتے شروع کیا گیا تھا جو چھوٹے کاروباروں کو آن لائن کام کرنے کا موقع فراہم کرے گا۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button