پاکستان

فواد چوہدری نے پبلک ٹرانسپورٹ کو الیکٹرک ٹکنالوجی میں منتقل کرنے کا اعلان کیا

وفاقی وزیر برائے سائنس و ٹیکنالوجی فواد چوہدری نے کہا ہے کہ ہم اگلی برقی گاڑی میں بھارت سے مقابلہ کریں گے اور آئندہ دو سے تین سالوں میں ہم اسے پاکستان اور ایشیاء میں کامیاب بنائیں گے۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہمیں آلو اور گاجر فروخت کرنے کے بجائے جدید ٹکنالوجی پر عمل کرنا ہوگا۔ ملک کو ترقی کی راہ پر گامزن کرنے کے لئے سائنس اور ٹکنالوجی کا استعمال ضروری ہے۔

انہوں نے اورنج لائن منصوبے پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ اس پر اربوں روپے خرچ ہوچکے ہیں۔ اب حکومت کو اورنج لائن پر سالانہ 12 ارب روپے کی سبسڈی دینا ہوگی۔ میرے حلقے میں سڑک کے لئے حکومت کے پاس پیسہ نہیں ہے لیکن اورنج لائن پر اربوں روپے خرچ ہوئے ہیں۔

فواد چوہدری نے کہا کہ ملک میں پہلی بار الیکٹرک گاڑیوں کی پالیسی متعارف کروائی گئی ، اب پاکستان میں برقی بسوں کی تیاری بھی کی جائے گی۔ بارہ ارب روپے لاہور کے ہر خاندان کو ایک کار دے سکتے تھے۔ پاکستان میں ، ہر چیز بیرون ملک سے درآمد کی جاتی ہے اور قیمتیں بڑھ چکی ہیں۔

وفاقی وزیر نے کہا کہ کراچی ، لاہور اور اسلام آباد میں پبلک ٹرانسپورٹ کو الیکٹرک ٹکنالوجی میں منتقل کیا جائے گا۔ اگلے چھ ماہ میں ، الیکٹرک گاڑیاں چارج کرنے کی سہولت موٹر ویز پر دستیاب ہوگی۔

انہوں نے کہا کہ اگلے تین سالوں میں بجلی کے شعبے میں 2 ارب سے 4 بلین ڈالر کی سرمایہ کاری متوقع ہے۔ یونیورسٹی طلباء نے پہلی بار بجلی سے چلنے والی تین پہیے والی گاڑی بنائی ہے۔ پاکستانی یونیورسٹیوں کو منڈی سے جوڑنا۔

Related Articles

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

Back to top button